اشتہارات

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

بارسلونا۔ معروف کشمیری رہنما چوہدری ظہیر احمد عاطف پاک فیڈریشن سپین کی کشمیر کمیٹی کے چیئر مین مقرر


بارسلونا(کشمیر ویو نیوز) معروف کشمیری رہنما چوہدری ظہیر احمد عاطف پاک فیڈریشن سپین کی کشمیر کمیٹی کے چیئرمین مقرر ۔
پاک فیڈریشن سپین کے صدر چوہدری ثاقب طاہر نے معروف کشمیری رہنما چوہدری ظہیر احمد عاطف کو فیڈریشن کی کشمیر کمیٹی کا چیئرمین مقرر کر دیا۔ اس بات کا اعلان گزشتہ روز چوہدری ثاقب طاہر نے ظہیر احمد عاطف سے ایک ملاقات میں کیا۔اس ملاقات میں فیڈریشن کی تعلیمی کمیٹی کے چیئرمین ڈاکٹر انوارالحق اور فنانس سیکریٹری حق نواز چوہدری بھی موجود تھے۔
پاک فیڈریشن سپین کےصدر چوہدری ثاقب طاہر نے چوہدری ظہیر احمد عاطف کو ہدایت کی کہ تین دن کے اندر کشمیری کمیونٹی سے اپنی کمیٹی کے ارکان اور عہدیدار مقرر کرکے نام مجھے بھیج دیں تاکہ سب کا مشترکہ طور پر نوٹیفکیشن جاری کیا جاے۔آخر میں چوہدری ظہیر احمد عاطف نے چوہدری ثاقب طاہر و دیگر ممبران کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ آپ نے جو ذمہ داری مجھے سونپی ہے اور مجھ پر اعتماد کیا ہے میں اسے پورا کرنے کی ہر ممکن کوشش کرونگا

بارسلونا۔پاک فیڈریشن سپین یوتھ ونگ کی میٹنگ زیر صدارت صدر یوتھ ونگ چوہدری محمد اویس منعقد ہوئی


بارسلونا(کشمیر ویو نیوز) پاک فیڈریشن سپین یوتھ ونگ کی میٹنگ زیر صدارت صدر یوتھ ونگ چوہدری محمد اویس منعقد ہوئی۔اس میٹنگ میں یوتھ ونگ کے سیکریٹری جنرل چودھری محسن ذیشان گجر اور محمد اسحاق کے علاوہ۔پاک فیڈریشن سپین کے صدر چوہدری ثاقب طاہر۔فنانس سیکریٹری حق نواز چوہدری۔سیکریٹری جنرل راجہ بابر ناصر اور تعلیمی کمیٹی کے چیئرمین ڈاکٹر انوارالحق نے بھی خصوصی طور پر شرکت کی۔
اس میٹنگ میں مختلف امور پر بات چیت ہوئی۔

 

بارسلونا۔ ہالینڈ میں حضرت محمد ﷺ کے گستاخانہ خاکے جاری کرنے کے خلاف احتجاجی مظاہرہ


بارسلونا(کشمیر ویو نیوز) ہالینڈ میں حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم کے خاکے جاری کرنے کی ناپاک کوشش کے خلاف کولون کے نزدیک ساحل سمندر پر مسلم کمیونٹی کا ایک سیلاب امڈ ایا۔بارسلونا کی تاریخ میں یہ پہلا اتنا بڑا احتجاج تھا جس میں ہزاروں لوگوں نے شرکت کی۔پورا علاقہ ۔اللہ اکبر اور غلام ہیں غلام ہیں۔کے نعروں سے گونج اٹھا۔اور یہ بھی پہلی بار ہوا کہ بارسلونا کی تمام چھوٹی بڑی تنظیموں کے علاوہ تمام سیاسی۔سماجی اور مذہبی شخصیات نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔اور اتنے بڑے احاطہ میں تل دھرنے کی جگہ نہ تھی۔جگہ میں گنجائش سے زیادہ لوگ ہونے وجہ سے کافی تعداد میں لوگوں نے سڑک کی دوسری جانب بھی جمع ہوکر نعرے لگانے شروع کر دئے۔احتجاج کی تصویری جھلکیاں